بدھ‬‮   19   جنوری‬‮   2022
2

تعلیمی ادارے بھی محفوظ نہ رہے، سکول کا پرنسپل دسویں کلاس کی طالبہ کو کتنے عرصے تک زیادتی کا نشانہ بناتا رہا؟ ہوشربا انکشافات آگئے



اوکاڑہ(مانیٹرنگ ڈیسک) نجی اسکول کے پرنسپل نے دسویں جماعت کی طالبہ کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔جنگ اخبار کی رپورٹ کے مطابق پولیس نے متاثرہ طالبہ کی والدہ کی درخواست پر مقدمہ درج کر لیا ہے۔تھانہ رینالہ خورد میں درج ہونے والی ایف آئی آر کے مطابق پرنسپل ناصر نے مئی 2021ء میں قصبہ 7 ون ایل کی رہائشی کو نشہ آور چیز کھلا کر سکول کے کمرہ میں زیادتی کا نشانہ بنایا۔ملزم نے موبائل فون سے برہنہ تصاویر اور ویڈیوز بھی بنا لیں اور قتل کی دھمکی دے کر

کہا کہ کسی کو بتایا تو ویڈیوز وائرل کر دوں گا۔بعد میں متعدد بار بلیک میل کرتے ہوئے زیادتی کا نشانہ بنایا۔لڑکی نے تنگ آ کر والدہ کو بتایا تو ملزم نے برہنہ ویڈیو اور تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کر دیں۔ڈی پی او فیصل گلزار نے وقوعہ کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ڈی ایس پی رینالہ کی سربراہ میں آئی ٹی ماہرین پر مشتمل ماہر پولیس افسران کی خصوصی کمیٹی تشکیل دے دی، جس کی نگرانی ایس پی انوسٹی گیشن معاث ظفر کریں گے۔ملزم کی گرفتاری کے لیے مختلف مقامات پر چھاپے مارے

جا رہے ہیں۔دوسری جانب تھانہ احمد نگر کے علاقہ ساروکی میں تین نوجوانوں نے خانہ بدوش لڑکی کو زکوٰة کی رقم دینے کے بہانے گھر میں لے جاکر اجتماعی زیادی کا نشانہ بنا ڈالا۔وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے گوجرانوالہ کے تھانہ احمد نگر کی حدود میں بھکاری خاتون کے ساتھ مبینہ اجتماعی زیادتی کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آر پی او گوجرانوالہ سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ہدایت کی کہ ملزمان کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جائے اور متاثرہ خاتون کو انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ دریں اثناء گوجرانوالہ پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے اور خاتون سے زیادتی میں ملوث 2 ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ تیسرے ملزم کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔


اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


اہم خبریں

دلچسپ و عجیب

تازہ ترین ویڈیو

Copyright © 2022 infodesk.pk . All Rights Reserved